پاکستانی خبریںعالمی خبریں

او آئی سی اجلاس میں کشمیری قیادت کو دعوت دینے پر بھارت کا اعتراض مسترد

خلیج اردو

اسلام آباد: پاکستان نے او آئی سی وزرائے خارجہ اجلاس میں شرکت کے لیے کشمیری قیادت کو دعوت پر بھارت کے اعتراض کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا ہے۔

 

پاکستان کے ترجمان دفترخارجہ کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارت کے پاس جموں و کشمیر کے متنازع علاقے کو اپنا ’’اندرونی معاملہ‘‘ قرار دینے کا کوئی جواز نہیں ہے۔

 

 اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی متعدد قراردادوں کے مطابق ریاست جموں و کشمیر کا حتمی فیصلہ عوام کی مرضی کے مطابق ہونا ہے۔اقوام متحدہ کی سرپرستی میں غیرجانبدارانہ رائے شماری کرائی جائے گی۔

 

 ترجمان نے کہا کہ بھارت کے  دعوے  مقبوضہ جموں وکشمیر میں اس کے غیر قانونی قبضے اورجبرکی حقیقت کو دھندلا نہیں کر سکتے۔ عوام کے حق خود ارادیت کا عالمی احساس اقوام متحدہ کے چارٹر میں درج ایک اصول ہے۔

 

 او آئی سی نے کشمیری عوام کے حق خودارادیت کے لیے ان کی منصفانہ جدوجہد کی مسلسل حمایت کی ہے۔  روایتی طور پر کشمیری قیادت کو او آئی سی کے اجلاسوں میں شرکت کی دعوت دی ہے۔

 

ترجمان نے زور دیا ہے کہ بھارت او آئی سی  وزرائے خارجہ کی کونسل کے 48ویں اجلاس میں کشمیری عوام کے حقیقی نمائندوں کی شرکت میں رکاوٹیں پیدا نہ کرے اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی متعلقہ قراردادوں کے مطابق کشمیری عوام کو ان کا حق خودارادیت استعمال کرنے دے ۔

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button