سپورٹس

قطر میں فٹ بال کے ٹریننگ سائیٹ پر ایک فلپائنی مزدور کی ہلاکت پر تحقیقات کا آغاز ہوگیا،غفلت برتنے کے شواہد ملے تو سخت کارروائی کریں گے،قطری حکام

خلیج اردو
دوحہ: قطر میں فیفا ورلڈکپ، ٹریننگ ایریا میں ایک فلپائنی مزدور کی ہلاکت کیلئے تحقیقات کا آغاز ہوگیا۔ قطری حکام کے مطابق کام کی جگہ حفاظتی اقدامات سے متعلق تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

قطری حکام نے جمعرات کو بتایا کہ فیفا ورلڈ کپ کے دوران ٹریننگ سائٹ پر ایک فلپائنی شخص کی موت کے بعد قطر نے ورک سیفٹی کی تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

دوحہ میں 2022 ورلڈ کپ کے چیف ایگزیکٹیو ناصر الخطر نے روئٹرز کو تصدیق کی کہ ٹریننگ سائیٹ پر ایک مزدور کی موت ہوگئی تھی۔

آن لائن کھیلوں کی اشاعت دی ایتھلیٹک نے بدھ کے روز اطلاع دی ہے کہ سعودی قومی ٹیم کے تربیتی مقام سیلائن ریسارٹ میں ایک کار پارک میں لائٹس ٹھیک کرنے کا معاہدہ کرنے والا ایک فلپائنی شخص اس وقت ہلاک ہو گیا جب وہ گاڑی کے ساتھ چلتے ہوئے ریمپ سے پھسل گیا اور کنکریٹ اس کے سر پر گر گیا۔

متعلقہ مضامین / خبریں

متعدد نامعلوم ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے اس نے کہا کہ یہ حادثہ ورلڈ کپ کے دوران پیش آیا لیکن اس کی وضاحت نہیں کی گئی کہ کب۔ ریزورٹ نے فوری طور پر رائٹرز کے سوال کا جواب نہیں دیا۔

قطر کے ایک اور سرکاری اہلکار نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اگر تحقیقات سے یہ نتیجہ نکلتا ہے کہ حفاظتی پروٹوکول پر عمل نہیں کیا گیا، تو کمپنی قانونی کارروائی اور سخت مالی جرمانے کا نشانہ بنے گی۔

عہدیدار نے بتایا کہ قطر میں صحت اور حفاظت کے سخت معیارات متعارف کرائے جانے کے بعد سے کام سے متعلق حادثات کی شرح میں مسلسل کمی واقع ہوئی ہے اور ان پر عمل درآمد کو تیز کیا گیا ہے۔

ورلڈ کپ کے منتظمین سپریم کمیٹی برائے ترسیل اور میراث نے ایک بیان میں کہا ہے کہ وہ قطری تحقیقات میں شامل نہیں تھا کیونکہ "مقتول ایک ٹھیکیدار کے طور پر کام کر رہا تھا اور سپریم کورٹ کے حکم کے تحت فرائض سرانجام نہیں دے رہا تھا۔

Source: Khaleej Times

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button