متحدہ عرب امارات

دبئی میں تیز رفتار کشتی سے غوطہ خور کو ٹکر مارنے والے شخص کو سزا سنا دی گئی، عدالت نے 50,000 درہم جرمانہ کر دیا

خلیج اردو
دبئی: غوطہ خوری کرنے والا شخص حادثے میں 45 فیصد مستقل طور پر معذور ہو گیا اور یہ تب ہوا جب ایک غیر ملکی نے اسے کشتی سے ٹکر مار دی۔

یہ حادثہ پام دیرا میں جزیرہ ام الحتاب کے نیلے علاقے میں پیش آیا۔

متاثرہ شخص نے بتایا کہ وہ اپنے دوستوں کے ساتھ غوطہ خوری کی مشق کر رہا تھا کہ ایک تیز رفتار کشتی آئی اور اسے ٹکر مار دی۔ متائثرہ شخص نے سر میں چوٹ لگنے کے بعد یاٹ سے دور جانے کی کوشش کی لیکن ایسا کرنے میں ناکام رہا کیونکہ یاٹ کے پروپیلرز نے اسے کھینچ لیا۔

تفتیش کے مطابق متاثرہ نے بتایاکہ حادثے کے بعد چند منٹوں کے لیے رکنے کے بعد کشتی تیزی سے چلی گئی۔

متعلقہ مضامین / خبریں

حادثے کے بعد اس شخص کے دوستوں اور اس نے اسے خون بہہتے دیکھا۔ اس کے بعد اسے فوری طور پر پانی سے نکال کر اسپتال لے جایا گیا اورکوسٹ گارڈ اور پولیس کو بھی حادثے کی اطلاع دی گئی۔

فورانزک رپورٹ میں بتایا گیا کہ متاثرہ شخص کے جوڑوں میں فریکچر ہوا تھا اور اس کی ران کے پٹھے کاٹے گئے تھے۔ چوٹ نے انہیں 45 فیصد تک مستقل طور پر معذور کر دیا۔ اس کے غوطہ خوری کے آلات کو بھی نقصان پہنچا۔

ایک اور غوطہ خور نے پولیس کو بتایا کہ اس گروپ نے غوطہ خوری سے پہلے تمام حفاظتی اقدامات کیے تھے اور سمندر میں چھلانگ لگانے سے پہلے یاٹ پر سفید اور نیلے رنگ کا جھنڈا بھی لگا دیا تھا۔

دوسری طرف ملزم نے کہا کہ اس نے حادثے کے مقام سے صرف پانچ میل دور ایک کشتی دیکھی اور غوطہ خوروں کی نشاندہی کرنے والے کسی بھی جھنڈے کو نہیں دیکھا۔

متائثرہ شخص کو دبئی کی بدعنوانی کی عدالت نے مجرم قرار دیا ہے، اور اس پر 50,000 درہم جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔

Source: Khaleej Times

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button