متحدہ عرب امارات

متحدہ عرب امارات 432 گلوبل انڈیکیٹرز میں ٹاپ 10 ، 65 میں ٹاپ فائیو اور 19 میں پہلے نمبر پر ہے

خلیج اردو
دبئی: وفاقی مسابقتی اور شماریات مرکز کے مطابق متحدہ عرب امارات عالمی مسابقت کے 156 اشاریوں میں سرفہرست جبکہ 432 انڈیکیٹرز میں ٹاپ 10 میں شامل ہے۔

یہ اشاریے اس طرح کے عالمی اشاریہ جات کا 30 فیصد بنتے ہیں، منعکس کرتے ہیں کہ متحدہ عرب امارات کئی ضروری شعبوں میں سبقت رکھتا ہے جن میں تعلیم، ماحولیات، موسمیاتی تبدیلی، سلامتی اور تحفظ، سائبرسیکیوریٹی، بنیادی ڈھانچہ، ضوابط کی لچک، خوشحالی، گورننس، اور بہت کچھ شامل ہے۔

ان میں انٹرنیشنل انسٹی ٹیوٹ فار مینجمنٹ ڈویلپمنٹ کی عالمی مسابقتی سالانہ کتاب اور لیگیٹم انسٹی ٹیوٹ کی طرف سے جاری کردہ اشارے شامل ہیں۔

ایف سی ایس سی نے کہا کہ آئی ایم ڈی کے ڈبلیو سی وائے کے مطابق یو اے ای سو میں سے 88.67 کے اسکور کے ساتھ عالمی سطح پر 12 ویں نمبر پر ہے اور مینا خطے کی قیادت کر رہا ہے۔ متحدہ عرب امارات 65 اشاریوں میں ٹاپ فائیو ممالک میں شامل ہے اور 19 اشاریوں میں عالمی سطح پر پہلے نمبر پر ہے۔

متعلقہ مضامین / خبریں

ائیر بک کے چار اہم محوروں میں اپنی کارکردگی کے حوالے سے اقتصادی کارکردگی، حکومتی کارکردگی، کاروباری کارکردگی اور انفراسٹرکچر، متحدہ عرب امارات بالترتیب 6ویں، 3ویں، 17ویں اور 26ویں نمبر پر ہے۔

آئی ایم ڈی کی طرف سے عالمی مسابقتی سالانہ کتاب دنیا بھر کے 64 ممالک کی درجہ بندی کرتی ہے اور اس کی درجہ بندی کو عام طور پر چار اہم محوروں پر مبنی کرتا ہے۔ اقتصادی کارکردگی، حکومتی کارکردگی، کاروباری کارکردگی، اور انفراسٹرکچر، جس کے ذیلی محور آتے ہیں، مختلف اقتصادی، مالیاتی شعبوں میں مسابقتی اشاریوں کا احاطہ کرتے ہیں۔

قانون سازی، انتظامی اور سماجی شعبے ممالک کی مسابقت کی پیمائش کرنے والی سب سے زیادہ اشارے گہری رپورٹ کے طور پر کتاب میں 338 اشارے استعمال کیے گئے ہیں تاکہ اس بات کا اندازہ کیا جا سکے کہ قومیں اور کاروباری ادارے کس طرح خوشحالی حاصل کرنے کا انتظام کرتے ہیں۔

عالمی مسابقتی سالانہ کتاب کے مطابق 2022 میں سرفہرست پانچ ممالک ڈنمارک، سوئٹزرلینڈ، سنگاپور،سویڈن اور ہانگ کانگ ہیں۔

Source: Khaleej Times

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button