عالمی خبریں

امریکی نے چین کی بڑھتی ہوئی عسکری طاقت پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ پینٹاگون نے دعویٰ کیا ہے کہ چین کے جوہری ہتھیار میں تین گنا اضافہ ہوجائے گا۔

خلیج اردو

واشنگٹن: عالمی ذرائع ابلاغ کے مطابق چین کی تیزی سے بڑھتی ہوئی فوجی طاقت پر پینٹاگون نے خدشات کا اظہار کیا ہے۔ اپنے بیان میں امریکی محکمہ دفاع نے بتایا ہے کہ چین کے جوہری ہتھیاروں میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔ چین کے فعال جوہری وارہیڈز کا ذخیرہ 400 سے بڑھ چکا ہے اور اس پر 2035تک چین کے پاس ان ہتھیاروں کی تعداد 1500 ہو جائے گی۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ اس کے باوجود چین کے پاس امریکہ اور روس کے نیوکلیئر وارہیڈز کے مقابلے میں ذخیرہ کم ہی ہوگا کیونکہ امریکا اور روس کے پاس کئی ہزار نیوکلیئر وارہیڈز کے ذخیرے ہیں، یہ آمر قابل ذکر حد تک تشویشناک ہے کہ چین جوہری ہتھیار کو بڑھا رہا ہے۔

دفاعی ماہرین تصدیق کرتے ہیں کہ چین اپنے بیلسٹک میزائلوں میں بھی جدت لا رہا ہے جو اب جوہری ہتھیار لے جاسکیں گے۔ چین نے 2021 میں 135 میزائل تجربات کیے جو پوری دنیا کے میزائل تجربوں کی تعداد سے زیادہ ہے۔

متعلقہ مضامین / خبریں

چینی فضائیہ تیزی سے مغربی ممالک کی ایئرفورسز کے مدمقابل آرہی ہے۔ چینی فضائیہ آلات کے استعمال سمیت، پائلٹ اور دیگر معاملات میں بہتری کی طرف گامزن ہے۔

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button