عالمی خبریں

کرونا وائرس کی نئی قسم اومیکرون ہلکی بیماریوں کا سبب بنتا ہے، جنوبی افریقہ صحت حکام

خلیج اردو
کیپ ٹاؤن : جنوبی افریقی میڈیکل ایسوسی ایشن کے صدر انجلیک کوئٹزی نے ہفتے کے روز روسی سرکاری خبررساں ادارے سپوتنک کو بتایا ہےکہ کورونا وائرس کی نئی قسم اومیکرون کم شدت کی بیماری کا سبب بنتا ہے۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن ڈبلیو ایچ او نے جمعہ کے روز نئے جنوبی افریقی تناؤ کو تشویش کی وجہ کے طور پر شناخت کیا کیونکہ اس میں بہت زیادہ تبدیلیاں ہیں – 32 – جو اسے زیادہ متعدی اور خطرناک بنا سکتی ہیں۔ ڈبلیو ایچ او نے اسے اومیکرون کا نام دیا ہے جو یونانی حروف تہجی کا 15 واں حرف ہے۔

حکام نے بتایا ہے کہ یہ وائرس ہلکے بیماری جیسے جوڑوں کا درد یا بدن میں تھکاوٹ کا باعث بنتا ہے۔ ان افراد کو ہلکی کھانسی ہو سکتی ہے۔ ان میں کوئی ایسی واضح معلوم علامات نہیں ہیں۔ متاثرہ افراد میں سے کچھ فی الحال گھر پر موجود ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ اومیکرون سے متاثرہ مریضوں نے اسپتالوں پر کوئی اضافی بوجھ نہیں ڈالا ہے اور ویکسین کروانے والے افراد میں کوئی نیا تناؤ نہیں پایا گیا ہے لیکن جن افراد کو ویکسین نہیں دی گئی ہے ان پر اثر سخت ہو سکتا ہے۔

اس حوالے سے دو ہفتوں میں بطور معالج ہمیں معلوم ہو جائے گا لیکن اس کی زیادہ تشہیر پر ہم تشویش میں مبتلا ہیں۔ حکام کا کہنا ہے کہ ہم نے کچھ مریضوں کو داخل کیا ہے۔

Source :Khaleej Times

متعلقہ مضامین / خبریں

Back to top button